Web
Analytics
پاکستان اسلامی دنیا کی سربراہی کرنے کیلئے تیار!سعودی عرب اور ایران کے بعد ینی حکام بھی عمران خان کے پاس پہنچ گئے – Lahore TV Blogs
Home / انٹرنیشنل / پاکستان اسلامی دنیا کی سربراہی کرنے کیلئے تیار!سعودی عرب اور ایران کے بعد ینی حکام بھی عمران خان کے پاس پہنچ گئے

پاکستان اسلامی دنیا کی سربراہی کرنے کیلئے تیار!سعودی عرب اور ایران کے بعد ینی حکام بھی عمران خان کے پاس پہنچ گئے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)وزیر اعظم عمران خان نے یمن کے سفیر سے ملاقات میں ایک بار پھر پیشکش کی ہے کہ پاکستان یمن مسئلے کےسیاسی و پرامن حل کیلیے اپناکردار کرےگا۔ ۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کے دورہ سعودی عرب کے بعدسعودی عرب کی جانب سے پاکستان پر کی جانے والی مہربانیوں کو مشکوک نگاہوں سے دیکھا جارہا تھا۔تجزیہ کاروں کا خیال تھا کہ وزیر اعظم نے کسی بڑی ڈیل کے تحت سعودی عرب سے یہ رعایتیں حاصل کی ہیں۔یہ بھی خدشہ ظاہر کیا جارہا تھا کہ شائد پاکستان اپنی خود مختاری کا سودا کرکے اور یمن جنگ میں حصہ بننے کی شرط پر سعودی عرب سے یہ تمام رعایتیں حاصل کررہا ہے۔تاہم اس حوالے سے وزیر اعظم نے دورہ

سعودی عرب کے بعد اپنے پہلے ہی خطاب میں تمام خدشات کو غلط ثابت کردیا۔وزیر اعظم نے قوم کو اعتماد میں لیتے ہوئے یمن جنگ کے حوالے سے اپنا موقف واضح کر دیا۔وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ میں یہ بات واضح کردوں کہ پاکستان یمن جنگ کا حصہ نہیں بنے گا۔سعودی ،یمن جنگ کی وجہ سے امت مسلمہ شدید تکلیف میں ہے اور میں آپکو یقین دلاتا ہوں کہ ہم اس جنگ میں ثالث بن کر اس جنگ کو ختم کروائیں گے۔اس کے بعد انہوں نے ایرانی وزیر خارجہ سے ملاقات کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کو یمن کے معاملے پر ذاتی حیثیت میں ثالث بننے کی پیشکش کی تھی۔اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے یمن کے سفیر محمد مطاہر الشبی سے ملاقات کی ہے ۔وزیراعظم نے یمنی قیادت کےنام پیغام میں یمنی بحران کےجلد خاتمے کے جذبات کااظہارکیا۔یمنی سفیر نے پاکستان کی ترقی و خوشحالی کیلیے نیک خواہشات کا پیغام بھی پہنچایا۔وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ یمن بحران کا خاتمہ عالمی و خطے کی سلامتی کی کنجی ہے۔پاکستان اقوام متحدہ کی قراردادوں کےمطابق مسئلے کے جلد حل کا حامی ہے۔پاکستان یمن مسئلے کےسیاسی و پرامن حل کیلیے اپناکردار کرےگا۔یمن مسئلے کا کوئی فوجی حل نہیں ہے۔دوسری جانب یمنی سفیر نے بھی یمانی قیادت کی جانب سے پاکستان کے لیے نیک خواہشات کا پیغام وزیر اعظم تک پہنچایا۔