Web
Analytics
بھارتی وزیراعظم کی پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست، پاکستان نے اپنا فیصلہ سنادیا – Lahore TV Blogs
Home / اہم خبریں / بھارتی وزیراعظم کی پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست، پاکستان نے اپنا فیصلہ سنادیا

بھارتی وزیراعظم کی پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست، پاکستان نے اپنا فیصلہ سنادیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)پاکستان نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے طیارے کو پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دے دی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی جانب سے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا طیارہ کرغیزستان لے جانے کے لیے نئی دہلی کو اپنی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی 13 اور 14 جون کو کرغیزستان میں ہونے والی شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لیے بشکیک جائیں گے۔یاد رہے کہ پاکستان اور بھارت کے مابین کشیدہ تعلقات کی وجہ سے پاکستان نے اپنی فضائی حدود بھارت کے لیے بند کر دی تھیں جس کے بعد بھارت نے پاکستان سے درخواست کی تھی کہ وہ اپنی

فضائی حدود کھول دے اور وزیراعظم نریندر مودی کا طیارے اپنی فضائی حدود سے گزر کر کرغیزستان جانے کی اجازت دے۔بھارتی خبر رساں ایجنسی پریس ٹرسٹ انڈیا (پی ٹی آئی) کو تصدیق کی کہ پاکستانی حکومت نے بھارتی حکومت کو وزیراعظم نریندر مودی کا طیارہ اپنی فضائی حدود سے گزرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کرلیاضابطے کی کارروائی مکمل ہونے کے بعد بھارتی حکومت کو اس فیصلے کے بارے میں آگاہ کر دیا جائے گا۔یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں 14 فروری کو ایک کار خود کش دھماکے میں 40 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے تھے جس کا الزام بھارت نے براہ راست پاکستان پر عائد کیا تھا۔ پلوامہ واقعے کے بعد صورتحال کشیدہ ہوئی اور 26 فروری کی رات بھارتی فضائیہ نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کی جس پر پاک فضائیہ کی بروقت جوابی کارروائی پر بھارتی طیارے بالاکوٹ کے قریب نصب ہتھیار پھینکتے ہوئے بھاگ نکلے تھے۔جس کے بعد بدھ کی صبح 27 فروری کو پاک فضائیہ نے بھارت کو سرپرائز دیتے ہوئے بھارت کے دو طیارے مار گرائے جبکہ ایک بھارتی پائلٹ کو بھی گرفتار کر لیا گیا تھا۔ پاک فوج نے ابھی نندن کو مشتعل ہجوم سے بچایا اور حراست میں لے لیا تھا۔ بھارتی پائلٹ ونگ کمانڈر ابھی نندن کی گرفتاری کے بعد سے بھارتی میڈیا میں یہ چرچا تھا کہ پاکستان اب پائلٹ کی رہائی کے لیے بھارت کے سامنے شرائط رکھے گا ، بھارتی حکومت نے مؤقف دیا کہ ہم کسی قسم کی شرائط ماننے کو تیار نہیں ہیں۔لیکن 28 فروری کو جمعرات کے روز پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان نے بھارتی پائلٹ کی رہائی کا اعلان کیا اور ساتھ ہی کہا کہ ہم بھارتی پائلٹ کو امن کے فروغ کے لیے جذبہ خیر سگالی کے تحت رہا کر رہے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کے اس فیصلے کو نہ صرف پاکستان اور بھارت بلکہ عالمی سطح پر بھی خوب سراہا گیا تھا۔جس کے بعد یکم مارچ کو بھارتی پائلٹ کو واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ لیکن اس سب کے باوجود بھی بھارت اپنی ہٹ دھرمی اور جارحیت سے باز نہ آیا اور اب بھی بھارتی رہنما پاکستان کے خلاف زہر اُگل رہے ہیں۔ لیکن پاکستان نے ایک مرتبہ پھر امن کی خواہش کا اعادہ کیا اور بھارتی وزیراعظم کے طیارے کو پاکستان کی فضائی حدود سے گزرنے کی اجازت دے دی ہے۔