Web
Analytics
قوم کا پیسا واپس کرو اور جس ملک جانا ہے چلے جائو، سب کو پتاچل جانا چاہیئے کہ مجرموں کو چھڑانے میں اب باہر کے ممالک بھی مدد نہیں کرسکتے! – Lahore TV Blogs
Home / پاکستان / قوم کا پیسا واپس کرو اور جس ملک جانا ہے چلے جائو، سب کو پتاچل جانا چاہیئے کہ مجرموں کو چھڑانے میں اب باہر کے ممالک بھی مدد نہیں کرسکتے!

قوم کا پیسا واپس کرو اور جس ملک جانا ہے چلے جائو، سب کو پتاچل جانا چاہیئے کہ مجرموں کو چھڑانے میں اب باہر کے ممالک بھی مدد نہیں کرسکتے!

لاہور(نیوز ڈیسک) ڈیل ہو گئی،ہو رہی ہے یا ہونے والی ہے،آئے روز ٹی وی سکین پر بیٹھے تجزیہ کاراور سیاستدان کتنے بڑے بڑے دعوے کرتے ہیں مگر وزیراعظم عمران خان جس نعرے پر پہلے دن کھڑے تھے آج بھی اسی نعرے پر موجود ہیں اور ٹس سے مس نہیں ہوئے۔ویسے تو وزیراعظم عمران خان یوٹرن لینے کے حوالے سے خاصی شہرت پا چکے ہیں مگر حیرانی کی بات ہے کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے لیڈران کو رعایت دینے کے حوالے سے وہ یوٹرن کا یو بھی نہیں لینا چاہتے ۔حالانکہ ان کی پارٹی کے ہی کئی وزیر مشیر انہیںنواز شریف اور زرداری کو کچھ رعایت دینے اور پیسے لے کر باہر جانے دینے کا کہہ رہے

ہیں مگر عمران خان اپنی ضد پر اڑے ہوئے ہیں کہ پیسا دیں اور پھر جائیں۔عمران خان تہیہ کر چکے ہیں کہ اب کی بار انہیں مفت میں باہر نہیں جانے دوں گا وگرنہ جیل کی کال کوٹھڑی ان کا مقدر ہے۔مگر پہلے عمران خان ان کا کڑا احتساب چاہتے تھے جبکہ اب کچھ لوگوں یا دوست ممالک کی وجہ سے این آر او تو نہیں مگر پلی بارگین کے لیے تیار ہو چکے ہیں۔اسی حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف زرداری کو پیشکش کی ہے کہ این آر او نہیں بلکہ پلی بارگین ہوگی پھر جہاں جانا چاہیں چلے جائیں۔نجی ٹی وی کو انٹرویو کے دوران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جیلوں میں موجود افراد کو پتہ چل جانا چاہیے کہ اب باہر کا ملک کچھ نہیں کر سکتا اور انہیں ملک سے باہر بھیجنے کے لیے کسی ملک کا دبائو نہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ اس بار انہیں ملک کا پیسہ واپس کرنا ہے، پھر بسم اللہ باہر چلے جائیں۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کہتے ہیں کہ طبیعت ٹھیک نہیں، پہلے پیسے واپس کریں پھر جدھر جانا چاہیں جائیں اور علاج کرا لیں جب کہ آصف زرداری کو مشکل ہے تو وہ پیسہ واپس کر دیں۔وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ منی لانڈرر کو وی آئی پی کی طرح رکھا ہوا ہے تاہم وزارت قانون کو کہا ہے کہ انہیں اس جیل میں ڈالنا چاہیے جہاں عام چوری میں لوگ جاتے ہیں۔یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس کیس میں 7 سال قید کی سزا کاٹ رہے ہیں جب کہ سابق صدر آصف علی زرداری جعلی اکائونٹس کیس میں تحقیقات کے سلسلے میں نیب کی تحویل میں ہیں۔