Web
Analytics
عمران خان کی ہیٹ ٹرک۔۔۔! خالد خان – Lahore TV Blogs
Home / بلاگز / عمران خان کی ہیٹ ٹرک۔۔۔! خالد خان

عمران خان کی ہیٹ ٹرک۔۔۔! خالد خان

xپاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے شادیوں کی ہیٹ ٹرک کرلی ہے۔شادی کرنے میں کوئی قباحت نہیں ہے۔جو بھی سکت اور استطاعت رکھتا ہے ،اس کو ضرور شادی کرنی چاہیے۔اسلام میں ایک مرد بیک وقت چار بیویاں رکھ سکتا ہے بشرطیکہ وہ ان کے ساتھ انصاف کرسکے۔نکاح کو آسان بنانا چاہیے تاکہ برائیاں اور گناہ تمام ہوں۔ نکاح اور شادی تقریبات کو سہل اورسادہ بنا نا چاہیے تاکہ غریب لوگ

بھی آسانی سے نکاح اور شادی کرسکیں۔حضرت ابوہریرہؓ سے روایت ہے کہ نبی اکرمﷺ نے ارشاد فرمایا کہ”عورت سے لوگ چار اغراض سے نکاح کرتے ہیں۔مال ودولت کی وجہ سے، یا حسب ونسب کی وجہ سے یا حسن وجمال کی وجہ سے یا دین واخلاق کی وجہ سے ۔(پس تم سب سے آخری بات یعنی) دیندار عورت کو اختیار کرو۔ اگر ایسا نہ کرو گے تو تمہارے ہاتھوں کو مٹی لگے گی۔(یعنی کسی وقت ندامت و پریشانی سے دوچار ہونا پڑے گا)”۔ایک اور حدیث ہے ۔ حضرت عائشہ ؓ فرماتی ہیں کہ رسول اللہ ؓ نے فرمایا کہ ” نکاح میری سنت ہے جو میری سنت پرعمل نہ کرے اس کا مجھ سے کوئی تعلق نہیں اور نکاح کیا کرواس لئے کہ تمہاری کثرت پر میں امتوں کے سامنے فخرکروں گا اور جس میں استطاعت ہوتو وہ نکاح کرلے اور جس میں استطاعت نہ ہو تو وہ روزے رکھے اس لئے کہ روزہ اس کی شہوت کو توڑدے گا۔”نکاح سنت نبوی ہے لیکن طلاق دنیا اسلام میں ناپسندیدہ فعل ہے۔عمران خان نے شادی کرکے اچھا اقدام اٹھایا ہے لیکن طلاق سے پرہیز کرنا چاہیے۔شادی کرنا بچوں کا کھیل یا کرکٹ میچ نہیں ہے بلکہ اہم فریضہ ہے۔ اس سلسلے میں جذبات سے کام نہیں لینا چاہیے بلکہ دانش مندی کا مظاہرہ کرنا چاہیے۔جمائما خان نے عمران خان کے لئے اپنا مذہب، ثقافت ، ملک اور سب کچھ چھوڑ کر شادی کرلی اور دو بچے بھی پیدا ہوئے۔ پھر عمران خان نے جما ئما خان کو طلاق دی۔ عمران خان نے نوازشریف حکومت کے خلاف دھرنا دیا اور ریحام خان نے اس

دوران عمران خان کا انٹرویو کیا لیا ؟ اس کا دل لے لیا۔ریحام خان کے ساتھ شادی کرلی اور پھر کچھ عرصے کے بعد راہیں جدا کرلیں۔اس طرح نہیںکرنا چاہیے کہ ایک خاتون سے شادی کی اور پھر کچھ عرصے کے بعد طلاق دی ۔اسی طرح کسی کی زندگی کے ساتھ کھیلنا نہیں چاہیے ۔ایسے حرکات عام شخص کو زیب نہیں دیتی جبکہ عمران خان ایک سیاسی پارٹی کا سربراہ ہے اور ملک کا وزیر اعظم بننے کی خواہش بھی رکھتا ہے ۔ عمران خان کو تمام معاملات میں سنجیدگی کا

مظاہرہ کرنا چاہیے۔عمران خان نے گذشتہ تقریباً پانچ سال شادیوں اور دھرنوں میں گذارے ہیں حالانکہ اس کو یہ قیمتی وقت شادی کے ساتھ ساتھ صوبہ خیبر پختونخواہ کے لوگوں کو دینا چاہیے تھا کیونکہ ان لوگوں نے اس پر اعتماد اور بھروسہ کیا۔عمران خان کو صوبہ خیبر پختونخواہ میں سب اچھا کی رپورٹ دیتے رہے ہیں ۔وہ یہ سمجھتا رہا ہے کہ واقعی سب اچھا ہے۔ شہد اور دودہ کی نہریں بہنے لگی ہیں اور الہ دین کے چراغ سے لوگوں کے سب مسائل حل ہوگئے ہیں۔ وہ ہیلی کاپٹر

میں جلسہ گاہ گیا اورسیٹج پر خطاب کیا ۔ نعرے لگے اورسب ٹھیک نظر آیا ۔بس اللہ اللہ خیر سلا ۔ حضرت عمر ؓ خلیفہ بنے تو راتوں کو گلیوں میں گشت کرتے تھے تاکہ لوگوں کے حالات معلوم ہوسکیں۔عمران خان کو شادیوں سے فرصت ملے تو اس کو چاہیے کہ وہ اپنے آبائی حلقے میانوالی کا خفیہ دورہ کریں اور روپ بدل کر پھر عام گاڑی کے ذریعے عیسیٰ خیل درہ تنگ کے راستے سے لکی مروت ، بنوں اور ٹانک وغیرہ کا سفر کریں۔اس خفیہ سفر سے اس کو تین چیزوں کا مشاہد

ہ ہوجائے گا۔ (الف) صوبہ خیبر پختونخواہ کی سڑکوں کی حالت کا پتہ چل جائے گا۔ (ب)صوبہ خیبر پختونخواہ کی پولیس کا علم ہوجائے گا۔ جس کے بارے میں وہ ہر جلسے میں تعریفوں کے چاند ستاروں کو ملاتا ہے۔(ج) صوبہ خیبر پختونخواہ کے عام لوگوں کی حالات زندگی کے بارے میں جانکھاری ہوجائے گی۔عمران خان کو ضلع میانوالی اور صوبہ خیبر پختونخواہ کے لوگوں کا مشکور ہوناچاہیے۔ضلع میانوالی کے لوگوں نے اس کو عزت دی اور اس کو ووٹ دے کر پہلی مرتبہ قومی

اسمبلی میں پہنچایا اور پھر صوبہ خیبر پختونخواہ کے لوگوں نے ووٹ دے کراس صوبے میں اس کی پارٹی کی حکومت بنائی۔ اب اس کو شادیوں کے چکرسے نکل کر صوبہ خیبر پختونخواہ کے لوگوں کو ٹائم دینا چاہیے۔عمران خان اور پاکستان تحریک انصاف کو سوشل میڈیا کی دنیا سے نکل کرحقیقی دنیا میں آنا چاہیے۔قارئین کرام!عمران خان نے پاکپتن کے خاور فرید مانیکا کی سابقہ بیوی دیپالپور کے گائوں کوئیکی

کی رہنی والی روحانی مشیربشری ٰ بی بی دختر ریاض وٹو سے شادی کرکے شادیوں کی ہیٹرک کرلی ہے۔ عمران خان ان کے پاس روحانی مشوروں کیلئے جاتے تھے اور اب ان کو پاکپتن جانے کی بجائے اپنے گھر بنی گالہ ہی میں مشورے عنایت ہونگے ۔خداکرے کہ یہ اس کی آخری شادی ہو اور میاں بیوی خوش وخرم رہیں۔ عمران خان اور پیرنی بشریٰ بی بی جس نیک مقدس کیلئے رشتہ ازواج سے منسلک ہوئے ہیں،اس میں کامران ہوں۔