Web
Analytics
حضرت عمرؓ کی ذہانت – Lahore TV Blogs
Home / خصوصی فیچرز / حضرت عمرؓ کی ذہانت

حضرت عمرؓ کی ذہانت

ایک مرتبہ حضرت علیؓ نے خواب میں نبی کریمؐ کا دیدارکیا، انہوں نے خواب میں دیکھا کہ نبی کریمؐ نے فجرکی نماز پڑھائی اور انہوں نے پیچھے پڑھی، پھر نماز کے بعد نبی کریمؐ نمازیوں کی طرف رخ انور کرکے بیٹھ گئے، اس دوران میں ایک عورت آئی اور اس نے کھجوروں کا ایک بھرا ہوا تھال پیش کیا، نبی اکرمؐ نے اس میں دو کھجور لے کر حضرت علیؓ کو کھانے کے لیے دیا، جب انہوں نے وہ کھجوریں کھائیں

تو انہیں بڑا مزہ آیا، اس دوران ان کی آنکھ کھل گئی۔. انہیں خواب دیکھنے کا بھی بڑا مزہ آیا، ایک تو نبی کریمؐ کا دیدار ہوا، دوسرا ان کے پیچھے نماز پڑھی اور تیسرا ان کے ہاتھوں سے کھجوریں کھائیں.حضرت علیؓ فجر کی نماز کے لیے مسجد میں تشریف لائے، یہ خلافت فاروقی کا زمانہ تھا، سیدنا عمر فاروقؓ تشریف لائے اور انہوں نے نماز پڑھائی، اللہ تعالیٰ کی شان دیکھئے کہ انہوں نے نماز میں وہی دو سورتیں پڑھیں جو خواب میں نبی کریمؐ نے نماز میں پڑھی تھیں، حضرت علیؓ بڑے حیران ہوئے، پھر حضرت عمر فاروقؓ نماز کے بعد مقتدیوں کی طرف منہ کرکے بیٹھ گئے، حسن اتفاق دیکھئے کہ ایک عورت نے امیر المومنین کی طرف کھجوروں سے بھرا ہوا ایک تھال پہنچایا، حضرت عمرؓ نس میں سے دو کھجوریں اٹھائیں اور حضرت علیؓ کو کھانے کے لیے دیں، جب انہوں نے کھجوریوں کھائیں تو ان کا دل بڑا خوش ہوا، دو کھجوریں کھانے کے بعد انہوں نے کہا کہ امیرالمومنین! مجھے اور بھی دیجئے، اس بات پر حضرت عمرؓ مسکرائے اور فرمانے لگے: اگر آپ کو خواب میں نبی اکرمؐ نے اور بھی دی ہوتیں تو میں اور بھی عطا کر دیتا، یہ نور فراست ہوتا ہے جو تقویٰ کی بناء پر انسان کو حاصل ہوتا ہے، یہ نعمت ہر بندے کو نصیب ہوتی۔